نواز شریف کی طبیعت بدستور ناساز، پلیٹ لیٹس 45 ہزار سے 25 ہزار ہوگئے

اہور: سابق وزیر اعظم نواز شریف کی طبیعت بدستور ناساز ہے، پلیٹ لیٹس 45 ہزار سے کم ہو کر 25 ہزار ہو گئے، پلیٹ لیٹس میں اتار چڑھاؤ کے ساتھ نواز شریف کو انجائنہ کی تکلیف کا بھی سامنا ہے، میڈیکل بورڈ آج دوبارہ سابق وزیراعظم کا معائنہ کرے گا۔

سروسز ہسپتال میں گزشتہ 7 روز سے زیر علاج نواز شریف کی طبیعت تاحال سنبھل نہیں سکی، پلیٹ لیٹس میں اتار چڑھاؤ کا سامنا ہے، میڈیکل بورڈ نواز شریف کے علاج معالجے میں تذبذب کا شکار ہے۔

ہسپتال ذرائع کے مطابق سٹیرائیڈز دینے سے نواز شریف کا بلڈ پریشر اور شوگر لیول خراب ہو جاتا ہے، نواز شریف کے پلیٹ لیٹس پر توجہ دیں تو دل اور گردوں کے مسائل بڑھ رہے ہیں، سابق وزیراعظم کو آئی وی آئی جی انجیکشن کے ساتھ سٹیرائیڈز بھی دیئے گئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق پلیٹلیٹس بڑھانے کے لئے سٹیرائیڈز کا استعمال کیا جا رہا ہے، نواز شریف کے گردوں کے ٹیسٹ خراب آئے ہیں، سٹیرائیڈز دینا ضروری ہیں لیکن اس سے بلڈ پریشر اور شوگر بڑھ گیا ہے، دل کی ادویات روک دی گئیں۔ ذرائع میڈیکل بورڈ کا کہنا ہے 25 ہزار پلیٹ لیٹس پر دل کی ادویات نہیں دی جا سکتیں، دل کا سنگین مسئلہ ہے لیکن پلیٹ لیٹس کا گرنا بھی تشویشناک ہے۔

ادھر نواز شریف نے میڈیکل بورڈ پر اطمینان کا اظہار کیا ہے۔ ذارئع کے مطابق نواز شریف مزید علاج سروسز ہسپتال سے ہی کروائیں گے، مریم نواز بھی والد کی تیمارداری کے لیے ہسپتال میں موجود ہیں۔

متعلقہ خبریں