پنجاب اور خیبرپختونخوا میں ڈاکٹرز کی ہڑتال، مریضوں کو مشکلات کا سامنا

لاہور / پشاور: پنجاب اور خیبرپختونخوا کے اسپتالوں میں ڈاکٹرز کی ہڑتال جاری ہے جس کے باعث مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

پنجاب میں ایم ٹی ایکٹ کے خلاف ڈاکٹرز کی ہڑتال کے باعث او پی ڈیز میں کام ٹھپ ہوگیا ہے جب کہ مریضوں اور ان کے لواحقین کو شدید مشکلات کا سامنا ہے، خیبرپختونخوا کے سرکاری اسپتالوں میں بھی ڈاکٹرز کی ہڑتال نے مشکلات پیدا کردی ہیں۔

پشاور میں گرینڈ ہیلتھ الائنس کی کال پر صوبے بھر کے اسپتالوں میں 36 ویں روز بھی ڈاکٹروں کی ہڑتال جاری ہے جس کے باعث اسپتالوں میں اوپی ڈیز و الیکٹو سروسز بند ہیں جب کہ پولیو مہم کا بائیکاٹ بھی جاری ہے، لکی مروت اور چارسدہ سے بھی مزید ڈاکٹروں نے پولیو کے خاتمے کی کمیٹیوں کی چیئرمین شپ سے استعفے دے دیے ہیں۔

فیصل آباد میں بھی ڈاکٹرز، نرسز اور پیرا میڈیکل اسٹاف کی ٹیچنگ اسپتالوں میں ہڑتال 20 ویں روز بھی جاری ہے، آؤٹ ڈور وارڈز، آپریشن تھیٹرز، لیبارٹریز اور ان ڈور وارڈ میں مکمل ہڑتال ہے۔

دوسری جانب راولپنڈی میں ایم ٹی آئی کے خلاف ڈاکٹرز اور حکومت کے درمیان ڈیڈ لاک برقرار ہے، ذرائع وائے ڈی اے کے مطابق صوبائی وزیر صحت ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کر رہے ہیں جب کہ ہڑتالی ڈاکٹرز اور نرسسز کو برطرف کرنے کے لیے فہرستیں بھی تیار کرلی گئی ہیں۔