گذشتہ سال کاشتکاری 9 سال کی کم ترین سطح پر، کپاس، گنا، چاول اور گندم کی پیداوار متاثر ہوئی

کراچی:  گذشتہ سال کاشتکاری 9 سال کی کم ترین سطح پر ریکارڈ کی گئی، کم رقبہ استعمال ہونے سے کپاس، گنا، چاول اور گندم کی پیداوار متاثر ہوئی۔

سٹیٹ بینک کی سالانہ جائزہ رپورٹ کے مطابق گذشتہ سال کاشتکاری کے لئے کم رقبہ استعمال ہونے سے بڑی فصلوں کی پیداوار متاثر ہوئی۔ تفیصلات کے مطابق گذشتہ برس کپاس کی پیداوار ساڑھے 17 فیصد کمی اور 98 لاکھ کاٹن بیلز تیار ہوئیں۔

چاول کی پیداوار 3 اعشاریہ 3 فیصد کمی کے بعد 72 لاکھ ٹن، گنے کی پیداوار میں 19 اعشاریہ 4 فیصد کمی کے بعد 6 کروڑ 70 لاکھ ٹن اور گندم کی پیداوار 3 اعشاریہ 2 فیصد کمی کے بعد 2 کروڑ 42 لاکھ ٹن رہی۔

تجزیہ کاروں کے مطابق حکومت کو زراعت کے شعبے پر خاص توجہ کی ضرورت ہے اور ایک سروے کے ذریعے یہ پتہ لگانا ہوگا کہ ملک میں کس فصل کی کتنی ضرورت ہے اور موسمیاتی تبدیلوں کے باعث کون سی فصل کب اور کتنے رقبے پر لگانے ہو گی۔

متعلقہ خبریں