سلیکٹڈ اور کٹھ پتلی نظام کو نہیں مانتے، بلاول بھٹو زرداری

اسلام آباد: چیئرمین پیپلز پارٹی نے اپوزیشن کے جلسے سے خطاب میں حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ ہم سب نے مل کر آئین کو تسلیم کیا تھا۔ پاکستان کے عوام صرف جمہوریت کو مانتے ہیں۔

بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ نئے پاکستان میں کس قسم کی جمہوریت اور آزادی ہے؟ ہمارے وزیر خزانہ کا فیصلہ آئی ایم ایف کرتا ہے، ہمارا بجٹ ہمارا نہیں ہے، ہمارے ملک کی معیشت کے فیصلے باہر سے کیے جا رہے ہیں۔ ہماری عوام کا معاشی قتل کر دیا گیا جبکہ امیروں کے لئے ٹیکس ایمنسٹی سکیم ہے۔ اگر وزیراعظم نالائق ہوگا تو خارجہ پالیسی پر بھی اثر ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ سیاسی جماعتوں کو اکھٹا کرنے پر مولانا فضل الرحمان کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ ہم اسلامی وفاقی نظام چاہتے ہیں۔ 70 سال بعد ملک میں شفاف انتخابات نہیں ہوسکے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ سلیکٹڈ حکومت عوام کی وجہ سے اقتدار میں نہیں آئی۔ پاکستان کےعوام کا معاشی قتل کر دیا گیا ہے۔ مہنگائی اور بے روز گاری میں اضافہ ہو رہا ہے۔

متعلقہ خبریں