شام میں دھماکے سے ترک فوجی گاڑی تباہ، ایک اہلکار جاں بحق اور 6 زخمی

تل ابیض: شمالی شام کے علاقے میں گشت پر مامور ترک فوج کی گاڑی کے نزدیک بارودی مواد کے دھماکے میں ایک اہلکار جاں بحق اور 6 زخمی ہوگئے۔

ترک میڈیا کے مطابق شمالی شام کے علاقوں راس العین اور تل ابیض میں کردوں کے زیر تسلط علاقوں میں امن و امان کی بحالی کے لیے ترک فوج پٹرولنگ کر رہی تھی، اسی دوران ترک فوج کی گاڑی کے نزدیک دیسی ساختہ بارودی مواد زوردار دھماکے سے پھٹ گیا جس کے نتیجے میں ایک فوجی جاں بحق اور 6 اہلکار زخمی ہوگئے۔

یہ خبر پڑھیں: شام میں ترک فوج کی کارروائی میں درجنوں کرد جنگجو ہلاک
ریسکیو اداروں نے امدادی کاموں کا آغاز کرتے ہوئے زخمی فوجی اہلکاروں کو ملٹری اسپتال منتقل کیا جہاں دو زخمیوں کی حالت نازک بتائی جارہی ہے۔ دھماکے میں دہشت گرد عناصر کے ملوث ہونے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے تاہم حکام نے تحقیقات مکمل ہونے تک کسی قسم کے تبصرے سے معذرت کی ہے۔ دھماکے کی نوعیت کا تعین نہیں کیا جا سکا ہے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: ترکی نے امریکا سے مذاکرات کے بعد کردوں کے خلاف فوجی آپریشن روک دیا

واضح رہے کہ ترک فوج نے شمالی شام میں آپریشن کے دوران کردوں کے ٹھکانے پر تابڑ توڑ حملے کیے تھے تاہم امریکی مداخلت کے بعد ترکی نے پیش قدمی کو روک کر کرد جنگجوؤں کو 400 کلومیٹر کا علاقہ فی الفور خالی کرنے کے لیے مہلت دی تھی جو اب ختم ہونے جارہی ہے۔

متعلقہ خبریں