وزیراعظم نے ملک میں صدارتی نظام سے متعلق خبروں کو مسترد کردیا

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے ملک میں صدارتی نظام سے متعلق خبروں کو مسترد کردیا۔

صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ صدارتی نظام کے بارے میں کوئی سوچ ہی موجود نہیں ہے۔

وزیراعظم سے سوال کیا گیا کہ غیرمنتخب لوگ کابینہ میں آئے ہیں اس لیے صدارتی نظام کے بارے میں تاثر ابھرا، اس پر وزیراعظم نے کہا کہ ماہرین کی ضرورت پڑتی ہے، اس لیے غیرمنتخب لوگوں کو کابینہ میں شامل کیا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ دیکھنا ہوگا کہ قانون سازی کے لیے پیش کردہ بلوں پر اپوزیشن کتناساتھ دیتی ہے، پیش کیے گئے بلوں کا تعلق سیاست سے نہیں عوام سے ہے۔

وزیراعظم نے ایک بار پھر این آر او سے متعلق سختی سے تردید کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن دباؤ ڈالنے کی کوشش کررہی ہے مگر این آر او نہیں ملے گا۔

سابق وزیر خزانہ اسد عمر سے متعلق سوال پر عمران خان نے کہا کہ اسد عمر آج بھی پی ٹی آئی کا حصہ ہیں، وہ زبردست آدمی ہیں۔

وزیراعظم کی صحافیوں سے ملاقات کے دوران وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی بھی موجود تھے۔