ایران جوہری معاہدہ: یورپی یونین نے مذاکرات کا حتمی مسودہ جمع کروا دیا

ویانا میں چار روز جاری رہنے والے ’ایران جوہری معاہدہ بحالی‘ مذاکرات کے بعد یورپی یونین نے مذاکرات کا حتمی مسودہ جمع کروا دیا۔

یورپی یونین حکام کا کہنا ہے کہ ہم نے چار روز کام کرنے کے بعد حتمی مسودہ جمع کروا دیا ہے، بات چیت کا اختتام ہو گیا، یہ حتمی مسودہ ہے اس پر مزید بات نہیں ہو گی۔

دوسری جانب ایرانی عہدیدار کا کہنا ہے کہ ایران یورپی یونین کےحتمی مسودے کا تفصیلی جائزہ لے رہا ہے، جیسے ہی آئیڈیاز موصول ہوئے ہم ابتدائی ردعمل اور تحفظات بتائیں گے۔

خبر ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ویانا مذاکرات میں ایران، روس، چین، برطانیہ، فرانس اور جرمنی شریک تھے جبکہ یورپی یونین کے تعاون سے ہونے والے ویانا مذاکرات میں امریکا بالواسطہ طور پر شریک ہوا۔

رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ ایران کے جوہری پروگرام پر ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان معاہدہ 2015 میں ہوا تھا جب کہ امریکا کے 2018 میں جوہری معاہدے سے نکل جانے کے بعد ایران بھی معاہدے سے پیچھے ہٹ گیا تھا۔

متعلقہ خبریں