طالبان نے قتل کے مجرم کو سرعام پھانسی دیدی

کابل: طالبان نے افغانستان میں گزشتہ برس اگست میں اقتدار حاصل کرنے کے بعد سے پہلی بار ایک شخص کو سرعام پھانسی دیدی۔ 

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان میں طالبان حکومت کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے اپنی ٹوئٹ میں بتایا کہ مغربی صوبے فراہ میں قتل کے مجرم کو شواہد کی بنیاد پر ملنے والی سزائے موت پر عمل درآمد کروادیا گیا۔

ذبیح اللہ مجاہد نے مزید بتایا کہ مذکورہ مجرم کو سرعام سزا دی گئی جس نے 2017 میں ایک شخص کو چاقو کے وار کرکے قتل کردیا تھا۔ بھانسی پر عمل درآمد کے وقت مجمع میں طالبان کے اعلیٰ عہدیدار بھی موجود تھے۔

تاہم انھوں نے یہ نہیں بتایا کہ موت کی سزا پر عمل درآمد کے لیے کون سا طریقہ استعمال کیا کیوں کہ ماضی میں طالبان زیادہ تر پھانسی اور کبھی کبھی گولی مار کر سزا پر عمل درآمد کرتے آئے ہیں۔

متعلقہ خبریں