امداد کا مقصد پاکستانی معیشت کو مستحکم کرنا اور اداروں کو مضبوط بنانا ہے: آئی ایم ایف

عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے قائم مقام ایم ڈی ڈیوڈ لپٹن کا کہنا ہے کہ پاکستان کو مالی امداد کا مقصد وہاں کی معیشت کو مستحکم کرنا اور اداروں کو مضبوط کرنا ہے۔

آئی ایم ایف کے قائم مقام ایم ڈی ڈیوڈ لپٹن نے واشنگٹن میں وزیراعظم عمران خان کے ساتھ ملاقات کی۔

David Lipton

@Lipton_IMF

I was pleased to meet Prime Minister @ImranKhanPTI of today. We agreed to work together to advance the government’s ambitious reform program, especially the effort to mobilize revenues that will fund much needed social and development spending.http://ow.ly/gBii50v7neK 

View image on Twitter
49 people are talking about this

ڈیوڈ لپٹن نے اپنے بیان میں کہا کہ وزیراعظم پاکستان کے ساتھ ملاقات کر کے خوشی ہوئی، ملاقات کے دوران پاکستان کی معاشی صورتحال پر بات چیت ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان سے پاکستان کے ریفارم پروگرام پر بات ہوئی کیونکہ آئی ایم ایف ریفارم پروگرام میں پاکستان کی معاونت کر رہا ہے۔

ایم ڈی آئی ایم ایف نے کہا کہ ریفارم پروگرام کا مقصد پاکستان کی معیشت کو مستحکم کرنا اور اداروں کو مضبوط بنانا ہے، آئی ایم ایف پروگرام پاکستان کو پائیدار اور متوازن ترقی دےگا۔

ڈیوڈ لپٹن نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان سے ملاقات میں آمدنی بڑھانے اور قرضوں پر انحصار کم کرنے کی اہمیت کو اجاگر کرنے پر زور دیا۔

انہوں نے کہا کہ ٹیکس آمدنی معاشرتی اور ترقیاتی اخراجات کی یقینی فراہمی کے لیے ضروری ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف اپنے عالمی پارٹنرز کے اشتراک سے پاکستان کے ریفارم پروگرام کی معاونت جاری رکھےگا۔