برطانیہ: اسلامو فوبیا کی لہر، نیوکاسل میں حملہ، مسجد کی عمارت کو نقصان

لندن:  برطانیہ میں اسلامو فوبیا کی نئی لہر، نفرت انگیز جرائم میں 600 فیصد اضافہ ہوگیا، نیوکاسل میں حملے سے مسجد کی عمارت اور قرآن مجید کے نسخوں کو نقصان پہنچایا گیا، پولیس نے 2 لڑکیوں سمیت 6 افراد کو حراست میں لے لیا۔

برطانوی میڈیا کے مطابق ان حملوں کو مسلمانوں کے خلاف نفرت انگیز جرائم کے تناظر میں دیکھا جا رہا ہے، جس میں 600 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ نیوکاسل میں اسلامک سکول پر حملے میں توڑ پھوڑ کے واقعے کے بعد 6 نوجوانوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔

22 مارچ کو برمنگھم کی 5 مساجد کو نقصان پہنچانے کے الزام ایک 34 سالہ شخص کو گرفتار کیا گیا ہے۔ پولیس نے ایسٹ لندن کی مسجد کے باہر ہتھوڑے سے ایک شخص پر ہونے والے حملے سے متعلق عوام سے معلومات کی اپیل کی ہے۔

گذشتہ جمعہ کو برطانیہ میں نماز جمعہ کے اوقات کے دوران اضافی سیکورٹی تعینات کی گئی تھی۔